55

سعود ی ایئر لائنز نے سعودی مملکت واپس آنے والوں کے لیے گائیڈ لائنز جاری کر دی

اے پی پی اور ایس او پیز پر اندراج سے محفوظ رہنے کے لئے حلف نامہ کورونا ، 7 دن کے سنگرن ، اطمینان اور اعتماد کی پیروی کریں۔

ریاض: سعودی ائیرلائن نے مسافروں کی واپسی کے لئے رہنما خطوط کا اعلان کیا ہے ، جس کے تحت مسافروں کو سات دن قرنطین میں گزارنا پڑے گا۔ اس کے علاوہ ، کورونا سے تحفظ کا ایک حلف نامہ بھی پیش کرنا ہوگا۔ اردو نیوز کے مطابق ، سعودی ایئرلائن کا کہنا ہے کہ مسافروں کو وزارت صحت کے جاری کردہ قواعد پر عمل کرنا ہے۔
وزارت صحت نے اس سلسلے میں ایک ‘حلف نامہ’ جاری کیا ہے جس میں ہر مسافر کو سات نکات پر سختی سے عمل پیرا ہونا ہے۔ اور آمد کی تاریخ واضح طور پر بیان کی جانی چاہئے۔ حلف نامے میں یہ شرط عائد کی گئی ہے کہ مسافر ملک کے ہوائی اڈے پر پہنچتے ہی اسے فارم پُر کرکے وزارت صحت کے متعلقہ کاؤنٹر پر جمع کروائے۔

ہر مسافر کو سات دن کے لئے خود کو الگ تھلگ رکھنا ہوگا ، جبکہ صحت کے کارکنوں کے لئے یہ پابندی تین دن کے لئے ہوگی۔ تنہائی کی مدت پوری ہونے کے بعد ، کورونا ٹیسٹ کی رپورٹ بھی پیش کرنا ہوگی۔ مسافر وزارت صحت کے ایپ ‘تاتمان’ اور ‘توکالنا’ پر اپنا اندراج کریں گے۔ مسافر ملک پہنچنے کے آٹھ گھنٹوں کے اندر ‘تاتمین’ ایپ پر اپنا پتہ فراہم کریں گے۔
کسی بھی مریض کو فوری طور پر وزارت صحت ٹول فری نمبر 7 937 یا قریبی ہیلتھ سنٹر کے ایمرجنسی ڈیپارٹمنٹ سے رابطہ کریں اگر ان میں کوئی علامات ظاہر ہوں۔ مسافروں کو اطمینان ایپ پر روزانہ کی رپورٹ پیش کرنا ہوگی۔ حلف نامے کی شق 7 میں کہا گیا ہے کہ ہر مسافر وزارت صحت کے ذریعہ جاری کردہ ایس او پیز کا مکمل خیال رکھے گا۔
تاہم ، حکام نے غیر ملکیوں کی سعودی عرب واپسی کے لئے ابھی کوئی حتمی تاریخ طے نہیں کی ہے۔ واضح رہے کہ سعودی ایئر کے ذریعے جاری کردہ 25 ممالک کی فہرست میں متحدہ عرب امارات ، کویت ، عمان اور بحرین شامل ہیں۔ مصر ، لبنان ، تیونس ، چین ، برطانیہ ، فرانس ، اٹلی ، جرمنی ، انڈونیشیا ، بنگلہ دیش ، یونان ، جرمنی ، ملائیشیا ، سوڈان ، ترکی ، نائیجیریا ، کینیا ، جنوبی افریقہ ، جبکہ پاکستان اور ہندوستان اس فہرست میں شامل نہیں ہیں۔

Spread the love

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں